Parveen shakir

پروین شاکر کا نام پاکستانی ادب میں ایک مشہور شاعرہ کے طور پر واقع ہے۔ وہ 1952ء میں لاہور میں پیدا ہوئیں۔ پروین شاکر نے اپنے زندگی میں مختلف شعری مجالوں میں اپنا کردار ادا کیا، جن میں عشق، خوابوں کی دنیا اور مرگ کے موضوعات شامل ہیں۔ انہوں نے اردو ادب کو نئے وزنوں، اندازوں اور تجدیدی نظریات کے ساتھ پیش کیا اور انکی شاعری میں ایک نئی طرز کی روح کی تازگی محسوس کی جاتی ہے۔

پروین شاکر نے انگریزی زبان میں اپنے بی اے ڈگری حاصل کی اور پھر کیمسٹری کی مدرسہ جات میں تدریس کی۔ انہوں نے زندگی کے مختلف حوالوں میں بھی کام کیا، جیسے کہ پاکستانی میڈیکل ریسرچ کونسل کے لئے ڈیوٹی کرنا اور کیمسٹری میں تدریس کرنا۔ ان کی زندگی کے دوران وہ شاعری کو مستقل طور پر جاری رکھتی رہیں۔

پروین شاکر کی شاعری کو عموماً معاشرتی اور مردانگی کے موضوعات پر مبنی تصور کیا جاتا ہے۔ ان کی شاعری میں شوق، عشق، بے چینی، خوابوں کی دنیا، تکلیف، غم و غصہ اور انسانی تجربات کو بیان کرنے کا عمق محسوس کیا جاتا ہے۔ انہوں نے شاعری کے لحاظ سے اپنی شخصیت کو بھی متاثر کیا، اور ان کے انداز میں بھی ان کی خودی کی روح محسوس کی جاتی ہے۔

پروین شاکر کو ادبی دنیا میں بہت سارے اعزاز حاصل ہوئے۔ انہوں نے شاعری کے لئے مختلف ادبی ایوارڈز بھی جیتے، جن میں پریشان خانی اور احساس طنز کا ایوارڈ بھی شامل ہیں۔ پروین شاکر کی وفات 26 دسمبر 1994ء میں ہوئی، لیکن ان کی شاعری اور ادبی وراثت زندہ ہے اور انہیں پاکستانی ادب کا اہم حصہ سمجھا جاتا ہے

Parveen shakir
Parveen shakir